India reports 11.8% jumps in cyber crime in 2020: NCRB data
India, US have similar goals, share same zeal towards climate change: Power Minister
Sitharaman announces govt guarantee worth Rs 30,600 cr for ‘bad bank’
Govt says, COVID weekly positivity rate for last 11 weeks is below 3%
FreeCurrencyRates.com

इंडियन आवाज़     19 Sep 2021 03:28:11      انڈین آواز

طبیبہ ام الفضل کی وفات پر آل انڈیا یونانی طبی کانگریس کا اظہارِ تعزیت

کل رات نو بجے 21 اگست کو طبیبہ ام الفضل اس دارفانی سے رحلت کرگئیں۔ ان کی وفات سے ہندوستان کے طبی حلقہ میں غم کا ماحول ہے۔ اس موقع پر آل انڈیا یونانی طبی کانگریس کے جنرل سیکریٹری ڈاکٹر سید احمد خاں نے اپنے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحومہ کی رحلت سے طبی حلقہ میں جو خلا پیدا ہوا ہے،وہ ناقابلِ تلافی معلوم ہوتا ہے۔ ان کا شمار یونانی طب کی بزرگ اور رہنما شخصیات میں تھا اب ان کے چلے جانے سے ایک سرپرست کے کھونے کا احساس ہورہا ہے۔


ڈاکٹر سید احمد خاں نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ طبی تحقیق کے فروغ میں یونانی کونسل کا اہم کردار ہے،اس ادارے کی ترقیات میں مرحومہ کی خدمات کو ہمیشہ یاد کیا جائے گا۔طبیبہ ام الفضل یونانی کونسل کے بانی ڈائریکٹر حکیم عبد الرزاق کی اہلیہ اور یونانی کونسل کی ڈپٹی ڈائرکٹر تھیں،اس طرح دونوں زندگی کے رفیقِ سفر کے ساتھ طبی کاز کی جد و جہد میں بھی دوش بدوش رہے۔


طبیبہ ام الفضل کی پیدائش ریاست حیدرآباد میں ہوئی،وہیں نظامیہ طبی کالج سے1955میں” طبیب مستند” کی ڈگری حاصل کی، پھر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طبیہ کالج میں ایک سال پڑھ کر بی یو ایم ایس کی سند حاصل کی ،یہاں ان کا داخلہ سال پنجم میں ہوا تھا،اس وقت نظامیہ طبی کالج میں چار سالہ نصاب پڑھایا جاتا تھا،وہاں کے بہت سے طلبہ علی گڑھ میں سال پنجم پڑھ کربی یو ایم ایس کی سند حاصل کرتے تھے۔ علی گڑھ میں پروفیسر حکیم محمد طیّب صاحب سے انہیں خاص رشتہ تلمذ رہا ہے۔طبیبہ ام الفضل علی گڑھ آنے سے پہلے ہی حکیم عبد الرزاق کے ساتھ رشتہ ازدواج سے منسلک ہوچکی تھیں،اس تعلق کے باعث حکیم عبد الرزاق کی علی گڑھ آمد رہتی،اسی زمانہ میں پروفیسر حکیم محمد طیّب اور حکیم عبد الرزاق کے دوستانہ مراسم استوار ہوئے،جو دونوں کے درمیان تاحیات قائم رہے،ان کے باہمی رشتے سے یونانی طب کو بڑا ہی فائدہ پہنچا ہے۔یونانی کونسل میں طبیبہ ام الفضل کی بیشتر ذمہ داریاں انتظامی امور سے متعلق تھیں،ان کی ایک اہم علمی یادگار ” یونانی طب میں گھریلو ادویہ اور عام معالجہ کی کتاب” ہے اس کے متعدد ہندوستانی زبانوں میں تراجم ہوچکے ہیں۔ انہوں نے “مجاھد طب” کے نام سے اپنے شوہر حکیم عبد الرزاق پر مضامین کا ایک مجموعہ بھی مرتب کیا ہے۔ ڈاکٹر سید احمد خاں نے مزید کہا کہ مرحومہ کا یونانی کونسل سے جو دیرینہ تعلق رہا ہے اور اس ادارہ کے تئیں ان کی جو خدمات رہیں، ان کے اعتراف کی ایک اچھی شکل یہ ہے کہ کونسل سے شائع ہونے والے “جہان طب “کے ایک شمارے کو طبیبہ ام الفضل کے نام منسوب کیا جائے۔ یہ کونسل کی طرف سے ایک اچھا خراج ہوگا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

SPORTS

Delhi Capitals’ ultimate goal is to win the IPL; Captain Rishabh Pant

By Harpal Singh Bedi New Delhi, 18 September: Delhi Capitals' Captain Rishabh Pant, says his team's ultimat ...

​Raninder Singh Reelected President of the National Rifle Association of India

Harpal Singh Bedi New Delhi, 18 September: In a straight contest incumbent Raninder Singh defeated&nbs ...

Error-free rounds enable Honey Baisoya, Khalin Joshi to take joint halfway lead at J&K Open

Harpal Singh Bedi Srinagar, 16 September Delhi golfer Honey Baisoya and Bengaluru’s Khalin Joshi returned ...

خبرنامہ

اکاؤنٹ ایگریگیٹر – آپ کی مالیاتی زندگی کو کیسے آسان بنا سکتا ہے

عندلیب اخترگزشتہ ہفتے مرکزی حکومت نے ایک نئے مالیاتی ڈیٹا شی ...

اقوام متحدہ کے سربراہ کی اس عالمی ادارے کی فعالیت بہتر بنانے کے لیے تجاویز

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انٹونیو گوٹیرش نے اس عالمی ادارے ...

نائن الیون9/11 کی بیسویں برسی: بائیڈن کی جانب سے اتحاد کی اپیل

WEB DESK امریکی صدر جو بائیڈن نے نیو یارک کے ٹوئن ٹاورز پر حملو ...

MARQUEE

Google Doodle Honours Poet, Freedom Fighter Subhadra Kumari Chauhan

WEB DESKOn the occasion of the Indian activist and author's 117th birth anniversary,Google Doodle on Monday, 1 ...

Kerala Governor appeals jewellers to refrain from using photographs of brides to further their sales

AMN Kerala Governor Arif Mohammed Khan today appealed to jewellers to refrain from using the photographs of ...

@Powered By: Logicsart

The Indian Awaaz