FreeCurrencyRates.com

इंडियन आवाज़     24 Sep 2017 05:34:57      انڈین آواز
Ad

ٹرمپ کی سفری پابندی سے امريکی کمپنياں پریشان

امريکی سياحت کی صنعت کو آئندہ تين تا پانچ برسوں ميں اس کا خميازہ بھگتنا پڑے گا۔ رپورٹ

AMN

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کی سفری پابندی سے امریکا کی معاشی حالات پر منفی اثر پڑنا شرو ہو گیا ہے. امریکا میں سياحت سے متعلق کمپنيوں کو خدشہ ہے کہ انتظاميہ کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات سے يہ صنعت منفی طور پر متاثر ہو رہی ہے ۔ ان کمپنيوں نے مسلمان ممالک سے سفر کرنے والوں پر پابندی کو بھی تنقيد کا نشانہ بنايا ہے۔
صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی رواں سال جنوری ميں چند مسلم ممالک سے امريکا سفر کرنے والوں پر خلاف پابندی کو عدليہ کی جانب سے رد کر ديے جانے کے باوجود پچھلے چند مہينوں ميں امريکی سياحت کی صنعت منفی طور پر متاثر ہوئی ہے۔ اپريل ميں اس صنعت ميں ترقی کی رفتار پچھلے چھ مہينوں کے مقابلے ميں کم رہی۔ يہ انکشاف ’آکسفورڈ اکنامکس‘ کے اشتراک سے امريکی ٹريول ايسوسی ايشن کے حال ہی میں شائع کردہ اعداد و شمار ميں کيا گيا ہے۔ اعداد و شمار پر مبنی رپورٹ ميں مزيد لکھا ہے، ’’مستقبل ميں بھی امريکی ڈالر کی قدر، غير مستحکم عالمی معيشت اور موجودہ ملکی سياسی ماحول کے عناصر بين الاقوامی اور داخلی سفر کو منفی طور پر متاثر کر سکتے ہيں۔‘‘

ری پبلکن پارٹی کے ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں سال جنوری ميں عہدہ صدارت سنبھالنے کے بعد ايک حکم نامہ جاری کرتے ہوئے چند مسلمان رياستوں کے شہريوں اور پناہ گزينوں کے امريکا سفر پر عارضی پابندی عائد کر دی تھی۔ تاہم ايک عدالت نے اسے نا اہل قرار دے ديا تھا۔ بعد ازاں ابتدائی حکم نامے ميں معمولی ترميم کے ساتھ صدر ٹرمپ نے ايک دوسرا حکم نامہ جاری کيا، جس ميں چھ مسلم ممالک کے شہريوں پر دوبارہ ايسی پابندی عائد کی گئی تاہم يہ پيش رفت بھی اس وقت عدالت ميں زير بحث ہے۔
امريکا ميں سياحت کی صنعت سے وابسہ افراد ٹرمپ کے ’امريکا پہلے‘ کے منشور کو ممکنہ سياحوں کے ليے خطرہ قرار ديتے ہيں۔ ملکی ٹريول ايسوسی ايشن کے چيف ايگزيکيٹو روجر ڈو نے اس بارے ميں بات کرتے ہوئے ايک پريس کانفرنس ميں کہا، ’’ہميں ٹرمپ انتظاميہ کی پاليسيوں کا جائزہ لينا پڑے گا۔ بہت سے سياح اب يہ سوچتے ہوں گے کہ آيا امريکا ہميں خوش آمديد کہتا ہے؟‘‘ ان کے بقول امريکی سياحت کی صنعت کو آئندہ تين تا پانچ برسوں ميں اس کا خميازہ بھگتنا پڑے گا۔

گزشتہ سال امريکا ميں سياحت کی صنعت کی ماليت تقريباً ايک ٹريلين ڈالر تھی۔ اس وقت عالمی سطح پر اس صنعت ميں ترقی ديکھی جا رہی ہے ليکن موجودہ امريکی پاليسياں امريکا کے ليے آنے والے سالوں ميں منفی ثابت ہو سکتی ہيں۔

Leave a Reply

You have to agree to the comment policy.

Ad

NEWS IN HINDI

Hindi: Text of PMs Mann Ki Baat on 24 September 2017

मेरे प्यारे देशवासियों, आप सबको नमस्कार । ...

BHU छात्रों पर लाठीचार्ज, छावनी में तब्दील हुआ कैंपस

AMN / VARANASI बीएचयू में छेड़खानी का विरोध करते ...

Ad
Ad
Ad

SPORTS

Saksham Pedal Delhi a mass cycling event to be held on 5 November

New Delhi Over 5000 cyclists from all over the country will take part in the "Saksham Pedal Delhi" a premie ...

India to clash with Australia in 3rd ODI at Indore

  In Cricket, India would look to pile on the misery for a struggling Australia and seal the five-matc ...

Ad

Archive

September 2017
M T W T F S S
« Aug    
 123
45678910
11121314151617
18192021222324
252627282930  

OPEN HOUSE

Mallya case: India gives fresh set of documents to UK

AMN India has given a fresh set of papers to the UK in the extradition case of businessman Vijay Mallya. Ex ...

@Powered By: Logicsart

Help us, spread the word about INDIAN AWAAZ

RSS
Follow by Email20
Facebook210
Facebook
Google+100
http://theindianawaaz.com/%D9%B9%D8%B1%D9%85%D9%BE-%DA%A9%DB%8C-%D8%B3%D9%81%D8%B1%DB%8C-%D9%BE%D8%A7%D8%A8%D9%86%D8%AF%DB%8C-%D8%B3%DB%92-%D8%A7%D9%85%D8%B1%D9%8A%DA%A9%DB%8C-%DA%A9%D9%85%D9%BE%D9%86%D9%8A%D8%A7%DA%BA-%D9%BE/">
LINKEDIN