Ad
FreeCurrencyRates.com

इंडियन आवाज़     14 Nov 2018 11:59:21      انڈین آواز
Ad

مختصر اردو خبریں -قومی

بابری مسجد کیس کی سماعت جنوری تک ملتوی
فیصلہ پارلیمانی الیکشن سے پہلے آنے کی امید کم
babriنئی دہلی،29اکتوبر(اے یو ایس)سپریم کورٹ نے بابری مسجد کیس کی سنوائی جنوری کے پہلے ہفتے تک ملتوی کردی۔اس دوران نئے بینچ کی تشکیل دی جائے گی۔ ایسا لگتا ہے کہ اب اس حساس اور سنجیدہ کیس کا فیصلہ پارلیمنٹ الیکشن کے بعدہی آجائے گا۔ چیف جسٹس رنجن گگوئی نے آج صبح اس کیس کی سماعت چار منٹ میں ہی ختم کی اور کہا کہ جنوری تک بابری مسجد کیس کے بارے میں عدالت کے نئے بینچ کی تشکیل دی جائے گی۔ اور یہ فیصلہ کیاجائے گا کیا کہ اس کی سماعت روزآنہ کی جائے گی یا نہیں۔ پچھلے کئی ہفتوں سے آر ایس ایس اور دوسرے ہندو تنظیموں نے رام مندر بنانے کی مہم تیز کردی تھی اور لگتا تھا کہ عدالت بھی کیس کی سماعت جلد از جلد کرے گی۔ دیپک مشرا کے ریٹائر ہونے کے بعد چیف جسٹس ترون گگوئی کو یہ فیصلہ کرنا ہے کہ ان کی جگہ اس کیس کی سماعت کون کرے گا۔ لیکن یہ تقریباً طے ہے کہ اس بینچ میں سربراہی نہیں کریں گے۔ جنوری میں ہی یہ فیصلہ کیا جائے گا کہ کیس کب سنا جائے گا۔ جسٹس دیپک مشرا کے علاوہ جسٹس نذیر اور جسٹس اشوک بھوشن اس کیس کی سماعت کررہے تھے لیکن آج جس بینچ نے اس کیس کو سنا ان میں چیف جسٹس کے علاوہ جسٹس کے ایم جوزف اور جسٹس ایس کے کول شامل ہیں۔اگر اس کیس کی سماعت پہلے ہوجاتی تو ہوسکتا تھا کہ بی جے پی کو اس کا فائدہ ہوجاتا ۔ اترپردیش کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد موریہ نے کہا کہ کیس ملتوی ہونا اچھا نہیں ہے جبکہ کانگریس کے رہنما نے کہا کہ بی جے پی اس معاملے کو ہر الیکشن سے پہلے اٹھاتا ہے تاکہ اس کا سیاسی فائدہ اٹھا سکے۔

حاملہ کو مارپیٹ کر اسپتال سے بھگایا، بیچ راستے ہوئی بچے کی پیدائش
آگرہ،29اکتوبر(اے یو ایس) آگرہ کے پناہٹ میں واقع کمیونٹی ہیلتھ سینٹر سے لاپرواہی کا ایک بڑا معاملہ سامنے آیا ہے۔ جمعہ کی رات حاملہ خاتون کو درد زدہ ہونے پراہل خانہ کمیونٹی ہیلتھ سینٹر پہنچے۔ جہاں کوئی ڈاکٹر موجود نہیں تھا۔ اس دوران ایک نرس نے خاتون کو تھپڑ مار کر صحت مرکز سے باہر کردیا۔ جس کے بعد سی ایچ سی سے تھوڑی دور پر ہی بچے کی پیدائش ہوگئی۔ اس کیس کو دبانے کے لئے پرسوتاکو بھرتی کر اگلے دن ڈسچارج کردیاگیا۔ معاملہ سامنے آنے کے بعد سی ایم اوڈاکٹر مکیش واتسو نے انچارج سے رپورٹ طلب کر تحقیقات کا حکم دیئے ہیں۔ملی معلومات کے مطابق متاثرہ خاتون کا نام سمن ہے جو گاؤں سیرب کی رہنے والی ہے۔اہل خانہ کا الزام ہے کہ آواز لگا نے پر ایک نرس چلاتے ہوئے آئی اور حاملہ کو کہیں اور لے جانے کے لئے کہنے لگی۔ رشتہ داروں نے نرس سے ڈاکٹروں کو فون کر بلانے کے لئے۔نرس نے منع کردیا۔ اس پر اہل خانہ نے اعلی افسران سے بات کرنے کی بات کہی۔ اس پر الزام ہے کہ نرس بھڑک گئی اور اس نے حاملہ کو تھپڑجڑ دیا۔یہ دیکھ کراہل خانہ نے ہنگامہ گیا۔ یہاں علاج نہ ملتادیکھ چھو ی رام سمن کو لیکرقریبی پرائیویٹ کے لئے لے جانے لگا۔تھوڑی دور جانے پر خاتون نے سڑک پر ہی بچے کو جنم دیا۔جب اس کی جانکاری نرس کو ملی تو اس نے اسٹاف کے لئے پرسوتاکو اسٹریچر پر لے جاکرسی ایچ سی میں بھرتی کرلیا۔ ہفتہ کو اسے ڈسچارج کردیا۔ فی الحال اس معاملے میں جانچ کا حکم جاری کیاگیا ہے۔

ناجائز تعلقات کے شک میں خاتون سمیت دو افرادکو گولی مار کرقتل
بھیڑ نے غصے میں پولیس پر کیا پتھراؤ
گیا،29اکتوبر(اے یو ایس)بہار کے گیا ضلع کے چاکند تھانہ علاقے میں ناجائز تعلقات کے الزام میں ہفتہ ۔اتوار کی رات ایک گھر میں گھس کر خاتون سمیت دو افراد کو گولی مار کر قتل کر دیا گیا۔ سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ راجیو مشرا نے بتایا کہ مرنے والوں میں راج مستری نسیم شاہ عرف منا (35) اور سنوجا مانجھی (35) شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سنوجھا مانجھی راج مستری مناکے ساتھ کام کرتی تھی۔منا اور سنوجا کے درمیا ن مبینہ تعلقات کو لیکر سنوجا کے سسرال والے مخالفت کرتے تھے۔مشرا نے کہا کہ سنوجا کے ایک دیور کو معاملے میں نامزد کیا گیا ہے۔ دیگر نامعلوم مجرموں کے خلاف ایف آئی آر رجسٹر کیا گیا ہے۔ حملہ آوروں نے سنوجا مانجھی کے گھر پر اس واقعہ کو انجام دیا۔ اس واردات کی مخالفت اتوار کی صبح مشتعل ہجوم نے چاکند تھانہ کے پولیس اہلکاروں پر پتھراؤ کیا بعد میں وہ مقامی سربراہ کی مداخلت پر خاموش ہوئے۔پولیس نے دونوں لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے گئے ضلع ہیڈکوارٹر واقع فضل نارائن مگدھ میڈیکل کالج سہ ہسپتال بھیجا اور معاملے کی چھان بین شروع کر دی ہے۔

ہاسٹل کے چار طالب علموں کو بدمعاشوں نے کیا اغوا
کپڑے اتار کر کی جم کر پٹائی اور بنائی ویڈیو
پٹنہ ،29اکتوبر(اے یو ایس)بیگو سرائے ضلع کے شہر تھانہ کے تحت پوکھریا محلہ واقع کشواہا ہاسٹل میں رہ رہے چار طالب علموں کی بے رحمی سے پٹائی اور انہیں ایک دوسرے کے ساتھ غیر معمولی سیکس کے لئے مجبور کرنے کا ویڈیو وائرل ہونے کے بعد پولیس نے سات ملزمان کو گرفتار کر کے جیل بھیج دیئے گئے۔شہر تھانہ انچارج ترلوک کمار مشرا نے اتوار کو بتایا کہ گزشتہ بدھ کو ہوئے اس واقعہ کو لے کر سات ملزمان گولو کمار، اجے کمار، ونود کمار، راجہ کمار، روہت کمار، گنیش کمار اور راہل کمار کو گرفتار کیا گیا۔سبھی کو ہفتہ کو چیف جسٹس مجسٹریٹ پنکج مشرا کے سامنے آنے کے بعد سب کو عدالتی حراست میں جیل بھیج دیا گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس اس معاملے میں دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے مسلسل کارروائی کر رہی ہے۔ پولیس کے مطابق پوکھریا محلہ کے وارڈ نمبر 38 رہائشی گولو کمار کے پینے کے پانی پلانٹ سے پانی نہیں خریدنے پر کالی مقام چوک کے قریب واقع کشواہا ہاسٹل کے چار طالب علموں کو ملزم اغوا کر اپنے ساتھ لے گئے۔طالب علموں کوبیگوسرائے منڈل کارکے پیچھے لے جانے کے بعدننگا کر اس بے رحمی سے پٹائی کردی گئی۔ہتھیار کے بل بوتے انہیں ایک دوسرے کے ساتھ غیر معمولی جنسی تعلق کرنے پر مجبور تھے۔

تیزرفتار ٹرین نے تین آدمی کو کچل ڈالا
نئی دہلی،29اکتوبر(اے یو ایس)ایک تیزرفتار ٹرین نے نانگلوئی ریلوے اسٹیشن کی پٹری پر بیٹھے ہوئے تین آدمیوں کو کچل ڈالا۔ ایک رپورٹ کے مطابق آج صبح وہ شراب پی کر پٹری پر لیٹے رہے اور ا س دوران بیکانیر سے آنے والی ریل گاڑی نے انہیں روند ڈالا۔ ٹرین کے ڈرائیور نے دور سے ہی سائرن بھی بجایا لیکن بے ہوشی کے عالم میں ان تین افرادپر اس کا کوئی اثر ہی نہیں ہوا اور وہ لیٹے رہے۔ اس سے پہلے دسہرہ کے دن امرتسر کے پاس60لوگ ٹرین سے روندے گئے جب وہ دسہرے کے دوران راون کے پتلے کوجلتا ہوا دیکھ رہے تھے۔

بدمعاشوں کی گولی سے سیلس مین زخمی، چھ لاکھ روپے لیکر فرار
امیٹھی،29اکتوبر(اے یو ایس) اترپردیش کے امیٹھی کے گوری گنج علاقے میں پیر کو بے خوف بدمعاشوں نے ایک پیٹرول پمپ کے سیلس مین کو گولی مار کر زخمی کردیا اورچھ لاکھ روپے لے کر فرار ہو گئے۔پولیس کے ذرائع نے بتایا کہ گوری گنج میں واقع ایک پیٹرول پمپ کا سیلس مین پارس رام تقریباً11 بجے چار لاکھ سے زائد روپے لے کر بینک میں جمع کرنے جارہاتھا۔ اسی دوران لودھی بابا پل کے نزدیک موٹر سائیکل پر سوار تین بدمعاشوں نے اسے گھیر لیا۔ بدمعاشوں نے روپے سے بھرابیگ لے کر فرار ہوگیا ۔ سیلس مین نے اس کی مخالفت کی تو بدمعاشوں نے اسے گولی مار دی، جس سے وہ سنگین طور پر زخمی ہوگیا۔بدمعاش چھ لاکھ روپے سے زائد لے کرفرار ہوگئے۔ زخمیوں کو ضلع اسپتال میں داخل کردیا گیا ہے. پولیس معاملے کی چھان بین کر رہی ہے۔

سڑک حادثے میں چار کی موت،18زخمی
بہرائچ،29اکتوبر(اے یو ایس) بہرائچ میں ایک دردناک حادثہ ہوگیا ہے۔ جہاں پی کپ اور ٹرک کی آمنے سامنے سے زور دار ٹکر ہوگئی۔ اس حادثے میں چار افراد جاں بحق 18 افراد زخمی ہوگئے۔یہ واقعہ موتی پور علاقے کے بہرائچ۔لکھیم پور مارگ پر واقع گڑ چوک پر ہوا۔ اتوار کی رات ایک پک اپ پر ایک ڈرائیور سمیت 24 افراد مارکیٹ سے واپس آ رہے تھے اور لکھیم پور میں عیسیٰ نگر واپس لوٹ رہے تھے۔ اس دوران راستے میں پی کپ اور ٹرک کی زور دار ٹکر ماردی۔جس میں چار افراد ہلاک جبکہ 18 افراد زخمی ہوگئے ۔ زخمیوں میں چھ کی حالت سنگین بتائی بتائی جا رہی ہے۔ سبھی کااسپتال میں علاج چل رہا ہے ۔ٹرک اور پی کپ کی ٹکر اتنی زور دار تھی کہ دونوں کے پرخچے اڑ گئے۔ گاڑی کو کٹواکراس میں پھنسے زخمیوں کو باہر نکالا گیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Ad
Ad
Ad

MARQUEE

US school students discuss ways to gun control

             Students  discuss strategies on legislation, communities, schools, and mental health and ...

3000-year-old relics found in Saudi Arabia

Jarash, near Abha in saudi Arabia is among the most important archaeological sites in Asir province Excavat ...

Ad

@Powered By: Logicsart